یہ پیوند حسبِ ضرورت انسولین خارج کرسکتا ہے

نیویارک: تھری ڈی پرنٹنگ اور جدید ترین حیاتیاتی مادوں سے ایک پیوند (امپلانٹ) تیار کیا گیا ہے جو ٹائپ ون ذیابیطس مریضوں کے لیے حسبِ ضرورت انسولین خارج کرتا رہے گا۔یہ تحقیق اپنے آخری مراحل میں ہے جسے رائس یونیورسٹی کے بایو انجینیئر نے ڈیزائن کیا ہے۔ اسے ذیابیطس کی عالمی تنظیم جے ڈی آر ایف نے ڈیزائن کیا ہے۔ یہ کاوش دو پی ایچ ڈی طالبہ اور ان کے استاد نے کی ہے جن کے نام اومید وائسے اور جورڈن مِلر ہیں۔ جورڈن مِلر گزشتہ 15 برس سے ایسے پیوند کی تیاری کررہے ہیں اور انہیں نے ایک خاص تکنیک واس کلچر استعمال کی ہے جس میں خون کی باریک نالیوں کو استعمال کیا جاسکتا ہے اور اب اسے وہ تھری ڈی پرنٹنگ کی طرف لے آئے ہیں۔

About akhtarsahu

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

x

Check Also

کورونا کے بڑھتے کیسز؛ کراچی میں موٹر سائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی

کراچی: کورونا وبا کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر کراچی میں ...

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow